چل میرا پت فلم کا ریویو

امید ہے سب احباب بہ خیر و عافیت ہوں گے۔
آج ہم بات کریں گے امریندر گل کی فلم 
چل میرا پت 
کی پہلی جھلک یعنی ٹریلر کے متعلق۔ اس فلم میں پہلی بار ہندوستان اور پاکستان کے پنجابی فنکار اپنے جلوے برابری سطح پر بکھیرتے نظر آٸیں گے۔
انڈ و پاک کے فنکار اس سے پہلے بھی کٸی فلموں میں اکٹھے کام کر چکے ہیں مگر سواۓ چند فلموں کے ہر انڈین فلم میں پاکستانی فنکاروں کو یا تو کوٸی قابل زکر کردار نہ ملتا یا فلم کسی بی سی یا ڈی کلاس بینر تلے بنتی جس میں اداکار بھی چند نا معلوم افراد ہوتے۔اور پاکستانی فلموں میں وہاں کے زی کلاس اداکار کو بھی سوپر سٹار بنا کر پیش کیا جاتا رہا۔
لیکن اس فلم کا ٹریلر دیکھ کے لگ رہا ہے کہ ہر فنکار اپنی اپنی جگہ مکمل طور پر گھیرے ہوۓ اپنے فن کا بھرپور مظاہرہ کر رہا ہے۔ ناصر چنیوٹی اکرم اداس اور افتخار ٹھاکر اپنے ہی مخصوص انداز میں پاکستانی طرز مزاح اور لب و لہجہ اپناۓ اپنی شناخت قاٸم رکھے ہوۓ ہیں۔ 
امریندر گل کی زیادہ تر فلموں میں جذبہ خیرسگالی۔ محبت۔ امن اور بھاٸی چارے کو ہی موضوع بنایا جاتا ہے خاص طور پہ ہندوستان اور پاکستان کے دمیان۔ اس لیۓ امید کی جا رہی تھی کہ اسکی فلم میں پاکستانی فنکاروں کو ماضی کے تجربات کی طرح ضاٸع نہیں کیا جاۓ گا اور یہ امید پوری ہوتی بھی نظر آ رہی ہے کیونکہ ٹریلر میں پاکستانی فنکار کافی جگہ گھیرے ہوۓ ہیں۔
ٹریلر دیکھ کر محسوس ہوتا ہے کہ یہ فلم بھرپور تفریح مہیا کرنے کے ساتھ ساتھ کم از کم دونوں ملکوں کی پنجابی فلم انڈسٹری کے مشترکہ فلمسازی کی طرف پہلا قدم ثابت ہوگی۔
ٹریلر ریلیز ہو کر کافی پذیراٸی حاصل کر چکا ہے اگر آپ نے نہیں دیکھا تو ابھی یوٹیوب کا ایک چکر لگاٸیں اور اس ٹریلر پر اپنی راۓ کا اظہار کمنٹ کی صورت کریں۔شکریہ
از۔آپ کا محسن
علی محسن

اپنا تبصرہ بھیجیں