ایک خوبصورت فلم “مکلاوا” کا مختصر تعارف

اسی سلسلے کی ایک خوبصورت فلم “مکلاوا” کا مختصر تعارف درج ذیل سطور میں قارئین کے پیشِ خدمت ہے۔ فلم کی کہانی دن رات شادی کے سپنے دیکھتے ایک نوجوان (ایمی ورک) کے گرد گھومتی ہے جسے اپنے سپنوں کے پورا ہونے کے لیے بڑے بھائی کی شادی کا انتظار ہے۔ اس کی یہ خواہش غیر متوقع پر بھائی کی شادی کے ساتھ ہی پوری ہوتی نظر آتی ہے جب دونوں بھائیوں کی شادی ایک ہی گھر میں طے پا جاتی ہے۔ مگر ان شادیوں کے ساتھ ہی کہانی نیا موڑ لیتی ہے جب بڑے بھائی کی دلہن تو شادی کے ساتھ ہی رخصت کر دی جاتی ہے مگر چھوٹے بھائی کا مکلاوا ( دلہن کی رخصتی) اگلے سال تک موخر کردیا جاتا ہے۔ مکلاوے سے قبل میاں بیوی ملنا تو درکنار ایک دوسرے کو دیکھ تک نہیں سکتے۔ اور پھر یہاں سے آغاز ہوتا ہے، اس کھٹی میٹھی کشمکش کا جس میں شندا (ایمی ورک) اپنی دلہن (سونم باجوہ) سے ملنے کی کوششیں کرتا ہے اور اسے ان کوششوں میں ساتھ حاصل ہے اپنے چچا (بی این شرما) جو خود ماضی میں ایسی ہی ایک ناکام کوشش کی وجہ سے ساری عمر کنوارا رہ گیا اور دوست (کرم جیت انمول) کا۔ ان کوششوں اور ان سے در آنے والی غلط فہمیوں کا کیا نتیجہ نکلتا ہے، اسے دیکھ کر آپ یقیناً لطف اندوز ہوں گے اور اس لطف کو دوبالا کرنے کے لیے فلم میں موجود ہیں، بات بات پر روٹھ جانے والے گھر کے چھوٹے داماد (گرپریت گھگی)۔
اگر آپ سادہ رو کہانی، دل کو چھو لینے والے مکالموں، بے ساختہ اداکاری اور دل کے تار چھیڑتی خوبصورت موسیقی سے مزین پنجابی فلموں کے مداح ہیں تو یہ فلم آپ کو یقیناً پسند آئیگی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں